۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔*نومولود کے کان میں آذان کہنا کیسا ہے؟؟*۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تحریر(تحقیق):ڈاکٹرابومحمدعبدالاحدسلفی
نومولودکےکان میں آذان کہنا کتاب وسنت سےثابت نہیں ہےاور نہ ہی اس مسئلہ پراجماع ثابت ہے۔۔۔۔
*//پیش کی جانےوالی روایات کی تحقیق:
1-عاصم بن عبیدالله عن عبیدالله بن ابی رافع عن ابی رافع سندسےمروی روایت
تخریج:سنن ابی داود,کتاب الادب,باب فی المولود فیؤذن فی اذنه,رقم الحدیث:5105_وسنن الترمذی,کتاب الاضاحی,باب الاذان فی اذن المولود,رقم:1514_ومسنداحمد:جلد6صفحہ391_والسنن الکبری للبیہقی:جلد9صفحہ305_ومصنف عبدالرزاق:جلد4صفحہ336
تحقیق:اسنادہ ضعیف
>اس کا راوی عاصم بن عبیدالله جمہور محدثین کےنزدیک حافظےکی خرابی کی وجہ سے"ضعیف"ہے_
*امام بخاری رحمه الله نےفرمایا"منکرالحدیث_"
(تاریخ الکبیرللبخاری:9159,تفہیم دین ازمبشراحمدربانی:صفحه122)
*حافظ ابن حجررحمه الله نےاس روایت کوعاصم کی وجہ سےضعیف کہاہے_"
(التلخیص الحبیر:1985,وتقریب:3065)
*امام نووی رحمہ اللہ نےفرمایا:وقدضعفہ الجمہور ۔
((خلاصۃ الاحکام:۸۷/۱ح۹۸))
*وقال العینی:وقدضعفہ الجمہور۔
((عمدۃ القاری:۱۳/۱۱))
*وقال الھیثمی:ضعفہ الجمہور۔
((مجمع الزوائد:۱۵۰/۸))

>مذید ان علماء کرام نےبهی اس روایت کوضعیف کہاہے:
*علامہ ناصرالدین البانی
*حافظ محمدزبیرعلی زئی
*ابویحیی نورپوری
*غلام مصطفی ظہیرامن پوری
*حافظ محمدعلی جوہر
*محمدیوسف ربانی
*جاویداقبال سیالکوٹی
*مبشراحمدربانی
*حافظ منشاءگجر
*ابومحمدعبدالاحدسلفی
*حافظ ندیم ظہیر
*شیخ عامر الانصاری
*شیخ نصیراحمدکاشف
وغیرهم
دیکهئے:{مختصر کتاب الجامع از ابومحمدعبدالاحدسلفی(قلمی نسخه):ج1ص25,26}
*نومولود کےکان میں آذان و اقامت کہنےکی دلیل کی تحقیق:
2-یحیی بن العَلاء الرازی عن مروان بن سالم عن طلحه بن عبیدالله العقیلی عن الحسین(یاالحسن)بن علی کی سندسےمروی حدیث
تخریج:مسندابی یعلی:ج12ص150ح6780_وعمل الیوم واللیلہ لابن السنی:623_وشعب الایمان للبیهقی:ج6ص390ح8619_وتاریخ ابن عساکر والامالی لابن بشران,بحوالہ السلسلہ الضعیفہ للالبانی:ج1ص321-329
تحقیق:اسنادہ موضوع(من گهڑت)
راویوں کے متعلق تحقیق:
>مروان بن سالم الغفاری
*امام بخاری اور امام مسلم فرماتےہیں"منکرالحدیث_"
*امام ساجی نےفرمایا"کذاب یضع الحدیث_"
*امام دارقطنی نےفرمایا"متروک الحدیث_"
*امام نسائی نےفرمایا"متروک الحدیث_"
*امام ابن ابی حاتم نےفرمایا"منکرالحدیث جدا,ضعیف الحدیث,لیس له حدیث قائم_"
(تهذیب التهذیب:جلد5صفحه385)
*حافظ ابن حجر نےفرمایا"متروک ہے_"
(تقریب:6570)
>یحیی بن العَلاء
*امام احمدبن حنبل اس کےمتعلق فرماتےہیں"کذاب یضع الحدیث_"
*امام نسائی اور امام دارقطنی فرماتےہیں"متروک الحدیث_"
(تهذیب التهذیب:ج6ص162)
*حافظ ابن حجرنےفرمایا"رمی بالوضع_"
(تقریب:7618)
>طلحہ بن عبیدالله العقیلی
*یہ مجہول ہے_"
(تقریب التهذیب:3069)

3-محمدبن یونس(الکدیمی)عن الحسن بن عمرو بن سیف عن القاسم بن مطیب عن منصور بن صفیہ عن ابی معبدعن ابن عباس کی سندسےمروی حدیث_
تخریج:شعب الایمان للبیهقی:ج6ص390ح8620
تحقیق:اسنادہ موضوع(من گهڑت,خودساختہ)
سند کی تحقیق:
>محمدبن یونس الکُدیمی
*امام ابن عدی فرماتےہیں"اس پر روایات گهڑنےکی تہمت ہے_
*امام ابن حبان فرماتےہیں"اس نےہزار(1000)سےزائد روایات گهڑی ہیں_
*اسی طرح موسی بن ہارون اور قاسم المطرز نےبهی اس کی تکذیب کی ہے_"
[میزان:37816_و تهذیب:6678]
>الحسن بن عمرو بن سیف بهی کذاب ومتروک ہے_"
{فتاوی علمیه المعروف توضیح الاحکام,تالیف:محدث العصرحافظ محمدزبیرعلی زئی رحمه الله,جلد:اول,صفحہ:245,ناشرمحمدسرورعاصم,اشاعت2009ءمکتبہ اسلامیہ}
**نومولود کےکان میں آذان کہنےکےسلسلےمیں حضرت عمربن عبدالعزیز رحمه الله کی روایت مستند نہیں ہے_(صحیح ثابت نہیں ہے)_"
[التلخیص الحبیر:273/4_ومختصرکتاب الجامع(قلمی نسخه):جلد1صفحه258]
>علماء کرام کےاقوال
*شیخ ابویحیی نورپوری نےفرمایا"نومولودکےکان میں آذان واقامت کہنا نہ ہی قرآن وحدیث سےثابت ہےاورنہ ہی اجماع سے_
(09-01-2019ء)
*شیخ حافظ زبیرعلی زئی نےفرمایا"اس کی بنیاد ضعیف روایات پر قائم ہے_"
(فتاوی علمیه:244/1)
*شیخ جاویداقبال سیالکوٹی نےفرمایا"اس سلسلہ میں تین روایات پیش کی جاتی ہیں جوناقابل حجت ہیں_"
(والدین اوراولاد کےحقوق:صفحہ49)
*شیخ ابوالحسن مبشراحمدربانی نےفرمایا"نومولود کےکان میں آذان کہنےکےبارےمیں نبی کریم صلی الله علیه وسلم سےکوئی حدیث ثابت نہیں ہے_"
(تفہیم دین کتاب الآذان,صفحہ نمبر:121)
*ابومحمدعبدالاحدسلفی نےفرمایا"اس مسئلہ پرنہ روایات ثابت ہیں اور نہ ہی اجماع,اس مسئلہ پر بہت زیادہ اختلاف ہے,لہذا اس سے بچا جائے_"واللّٰه اعلم
(19-12-2020ء)
و ما علینا الا البلاغ
 
Top