شیخ ابن عثیمین رحمہ اللہ فرماتے ہیں:

ایک ملازم چاہتا ہے کہ اسے مکمل تنخواہ ملے مگر ملازمت کے لئے جانے میں تاخیر کرتا ہے یا وقت مقررہ سے پہلے جلدی واپس آجاتا ہے تو اسے بھی ملازمت کے حق میں کمی شمار کی جائے گی اور یہ ان مطففین میں شامل ہوگا جن کے لئے اللہ تعالیٰ نے ویل کی وعید سنائی ہے۔
(شرح رياض الصالحين:5/403)

اللہ تعالیٰ کا فرمان ہے:

﴿وَیۡلࣱ لِّلۡمُطَفِّفِینَ﴾ [المطففين: ١]

اللہ تعالیٰ ہمیں اپنی ذمہ داریوں کو پوری امانت داری سے کما حقہ انجام دینے کی توفیق عطا فرمائے اور ہر طرح کی خیانت سے بچائے، آمین

---------------------------------------------------
ابو حمدان اشرف فیضی
ناظم جامعہ محمدیہ عربیہ رائیدرگ
25/اکتوبر 2021، بروز پیر
 
Top