ذیشان خان

Administrator
قنوتِ وتر کی دعائیں

✍ عتیق الرحمن ریاضی کلیہ سمیہ بلکڈیہوا نیپال
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

اَللّٰھُمَّ اھْدِنِیْ فِیْمَنْ ھَدَیْتَ۔
اے ﷲ! تو مجھے ہدایت دے کر ان میں (داخل کر) جنہیں تونے ہدایت دی (آمین)

وَعَافِنِیْ فِیْمَنْ عَافَیْتَ۔
اور مجھے عافیت دے کر ان میں (شامل کر) جنہیں تونے عافیت دی۔(آمین)

وَتَوَلَّنِیْ فِیْمَنْ تَوَلَّیْتَ۔
اور میری سرپرستی فرما ان لوگوں میں جن کی تونے سرپرستی فرمائی۔(آمین)

وَبَارِکْ لِیْ فِیْمَآ اَعْطَیْتَ۔
اور میرے لیے ان چیزوں میں برکت فرما جو تونے عطا کیں۔( آمین)

وَقِنِیْ شَرَّ مَا قَضَیْتَ۔
اور مجھے ان فیصلوں کے شر سے بچا جو تونے کیے۔ (آمین)

فَاِنَّکَ تَقْضِیْ وَلَا یُقْضٰی عَلَیْکَ۔
اس لیے کہ تو ہی فیصلے کرتا ہے اور تیرے (فیصلے کے) خلاف کوئی فیصلہ نہیں ہوسکتا۔

اِنَّہٗ لَا یَذِلُّ مَنْ وَّالَیْتَ۔
واقعہ یہ ہے کہ وہ ذلیل نہیں ہوسکتا جس کا تو دوست بن جائے۔

(وَلَا یَعِزُّ مَنْ عَادَیْتَ)
اور وہ معزز نہیں ہوسکتا جس سے تو دشمنی کرے۔

تَبَارَکْتَ رَبَّنَا وَتَعَالَیْتَ۔
اے ہمارے رب! تو بہت بابرکت اور نہایت بلند ہے۔‘‘


نوٹ ۔ شروع کے پانچ جملے دعائیہ کلمات ہیں صرف انہیں پر مقتدی کو آمین کہنا ہے ۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ آپ کا دینی بھائی: عتیق الرحمن الریاضی
 
Top