ذیشان خان

Administrator
بسم الله الرحمن الرحيم وبه نستعين

بیوی ایک عظیم نعمت

ازقلم: عبیداللہ بن شفیق الرحمٰن اعظمیؔ محمدیؔ مہسلہ
.........................................................
اللہ کی نعمتوں میں سے ایک عظیم نعمت بیوی بھی ہے، نیک بیوی کو شریعت نے دنیا کی دولت سے تعبیر کیا ہے، جیسا کہ پیارے نبی صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا: "الدُّنْيَا مَتَاعٌ وَخَيْرُ مَتَاعِ الدُّنْيَا الْمَرْأَةُ الصَّالِحَةُ" (صحيح مسلم:3716) دنیا پونجی اور سرمایہ ہے، اور دنیا کی سب سے قیمتی سرمایہ پاکباز اور صالح خاتون ہے-
اس حدیث میں پیارے نبی صلی اللہ علیہ و سلم نے نیک اور پاکیزہ بیوی کو دنیا کا مہنگا اور بہترین سامان قرار دیا ہے، کیونکہ بیوی جب نیک ہو تو اولاد کو نیک بناتی ہے، بچوں کی صحیح تربیت کرتی ہے، اپنے شوہر کو ٹوٹ کر چاہتی ہے، خوب خدمت کرتی ہے، گھر کو امن وسکون کا گہوارہ بناتی ہے، شوہر کے مال واولاد کی حفاظت کرتی ہے، اپنی عزت وناموس کی حفاظت کرتی ہے، شوہر کے دکھ درد کو اپنا غم سمجھتی ہے اور ہمیشہ غم اور تکلیف کو خوشیوں میں تبدیل کرنے کی ہر ممکن کوشش کرتی ہے، ایسی نیک بیوی جسے مل جائے یقیناً وہ بڑا خوش نصیب اور سعادت مند شخص ہے، شریعت نے ایسی بیوی کو دنیا کی بیش بہا پونجی کہا ہے، اس لیے شادی کرنے والوں کو چاہیے کہ اپنی شادی میں دینداری کو ترجیح دیں، نیک صفت والی خاتون سے شادی کریں، صورت اور چمڑی کی رنگت نہ دیکھیں، حسن وجمال، حسب ونسب اور دولت کو نہ دیکھیں، سیرت اور کردار کی خوبصورتی دیکھیں، اور دیندار خاتون کو اپنی بیوی بنائیں پھر دیکھیں ایسے رشتے میں کس قدر الفت ومحبت اور برکت کی نوازش ہوتی ہے، خیر وبھلائی کی کس قدر بارش ہوتی ہے، ان شاء اللہ!
قارئین کرام! بیوی ایک عظیم نعمت ہے، کیونکہ بیوی گناہ سے بچاتی ہے، دین وایمان اور عزت واخلاق کی حفاظت کرتی ہے، اور شوہر کا ہر کام کرتی ہے، انسان برسوں سے اپنی بیوی کے ساتھ رہتا ہے اور بیوی سے لطف اندوز ہوتا ہے مگر اسے یہ احساس ہی نہیں ہوتا ہے کہ بیوی بھی کوئی نعمت ہے، ذرا ان سے بیوی کی قدر اور اہمیت کے بارے میں پوچھیں جو بےچارہ بیوی کی نعمت سے محروم ہو اور اس کی شادی بیاہ کا مرحلہ پائے تکمیل تک نہ پہنچ پا رہا ہو یا بیوی انتقال کر گئی ہو، ایسا آدمی کس طرح بےہنگم زندگی گزارتا ہے، نہ کپڑا صاف، نہ جسم صاف، نہ گھر صاف، نہ بستر صاف، نہ بال مرتب، دیکھ کر ہی ایسے شخص کو پہچان لیا جاتا ہے، میرے بھائیو! اپنی بیویوں کی قدر کرو، ان کے ساتھ نرمی برتو، حسن اخلاق سے پیش آؤ، اپنی بیویوں کے حقوق کی ادائیگی میں کبھی کمی کوتاہی نہ کرو، مگر افسوس کی بات ہے کہ آج بہت سارے لوگ اپنی بیویوں پر ظلم ڈھاتے ہیں، بات بات پر مارتے پیٹتے ہیں، گالی گلوچ کرتے ہیں، بدسلوکی کرتے ہیں، ان کے حقوق کی ادائیگی میں شدید لاپرواہی برتتے ہیں، ایسے لوگوں کو نبی کریم صلی اللہ علیہ و سلم کے اس فرمان کو سامنے رکھنا چاہیے کہ نیک بیوی دنیا کی عظیم الشان دولت ہے، اللہ ہمیں اپنی بیویوں کے ساتھ حسن سلوک کی توفیق عطا فرمائے آمین-
══════════ ❁✿❁ ══════════
 
Top