ذیشان خان

Administrator
بسم الله الرحمن الرحيم وبه نستعين

عبادت میں دل کیوں نہیں لگتا ہے؟

ازقلم: عبیداللہ بن شفیق الرحمٰن اعظمیؔ محمدیؔ مہسلہ
.........................................................
ہمارے مسلم معاشرے کا المیہ یہ ہے کہ ہم میں سے اکثر لوگ اللہ کی عبادت نہیں کرتے ہیں، آج نیک لوگ بہت تھوڑے ہیں، نمازی بہت کم ہیں بےنمازی بہت زیادہ ہیں، اچھے لوگ بہت کم ہیں برے لوگ بہت زیادہ ہیں، آج اکثر مسلمانوں کی یہی شکایت ہے کہ میرا دل عبادت میں نہیں لگتا ہے، نماز تو پڑھنا چاہیے، لیکن کوشش کرتا ہوں کامیاب نہیں ہو پاتا ہوں، کبھی کبھار پڑھتا ہوں تو دل نہیں لگتا ہے، آپ ہمارے لیے دعا کیجیے، آئیے آج ہم یہ جاننے کی کوشش کرتے ہیں کہ عبادت میں دل کیوں نہیں لگتا ہے اس کے اسباب وعوامل کیا ہیں تاکہ ان اعمال سے ہم بچ سکیں، اور خشوع وخضوع کے ساتھ اللہ کی بندگی کر سکیں-
*عبادت میں دل نہ لگنے کے اسباب*
1) اللہ کی معصیت-
2) لغو کام زیادہ کرنا-
3) قرآن پر تدبر نہ کرنا-
4) دنیا کے کاموں میں ہمیشہ الجھے رہنا، بےمطلب ٹینشن پالنا-
5) عبادات کی روح سے بےخبر رہنا-
6) حرام کھانا-
7) اپنی بساط اور اہلیت سے بڑھ کر کوئی بڑی ذمہ داری سر پر اٹھا لینا-
8) اللہ سے توفیق نہ مانگنا-
9) اللهم مقلب القلوب ثبت قلبي على طاعتك، اس مبارک دعا کا نہ پڑھنا-
10) توبہ واستغفار نہ کرنا-
11) آخرت کی فکر نہ کرنا-
12) نیک لوگوں کی صحبت میں نہ رہنا-
13) علماء کرام کے دینی بیانات نہ سننا، دین نہ سیکھنا-
14) وقت پر شادی نہ کرنا-
15) کم سونا، اپنی نیند مکمل نہ کرنا-
16) تعوذ کا اہتمام نہ کرنا-
17) گانا سننا-
18) فحش کتابیں پڑھنا-
19) جماعت میں تاخیر سے پہنچنا، ہمیشہ مسبوق رہنا-
20) سنن ونوافل کی پابندی نہ کرنا-
21) اچھی طرح وضو نہ بنانا-
22) نماز میں صفوں کو درست نہ رکھنا-
یہ کچھ اسباب ہیں جن کی وجہ سے عبادت میں دل نہیں لگتا ہے، لہٰذا ہماری ذمہ داری بنتی ہے کہ ہم ان اعمال سے اجتناب کریں اور بالکل خلوص اور مکمل خشوع وخضوع کے ساتھ اللہ کی بندگی کریں، جب ہم نماز میں کھڑے ہوں تو یہ سمجھیں کہ ہم اللہ کے سامنے کھڑے ہیں اور ہم اللہ کو دیکھ رہے ہیں یا تو پھر اللہ ہمیں دیکھ ہی رہا ہے، اسی طرح جب نماز پڑھیں تو یہ سوچ کر پڑھیں کہ ممکن ہو کہ یہ میری زندگی کی آخری نماز ہو اور اسی نماز کے بارے میں کل قیامت کے دن مجھ سے سب سے پہلے پوچھا جائے گا، ان شاءاللہ نماز میں دل ضرور لگے گا، اور جب شیطان کا زیادہ وسوسہ آئے تو تین مرتبہ تعوذ پڑھ کر بائیں طرف تھوتھو کر دیں اور نماز میں مشغول ہو جائیں، اللہ تعالٰی ہم سب کو خشوع وخضوع والی نماز پڑھنے کی توفیق دے آمین-
══════════❁✿❁ ══════════
 
Top