ذیشان خان

Administrator
بسم الله الرحمن الرحيم وبه نستعين

سلفی منہج سے دشمنی کیوں؟

ازقلم: عبیداللہ بن شفیق الرحمٰن اعظمیؔ محمدیؔ مہسلہ
.........................................................
سلفی منہج کہتے ہیں کتاب وسنت کو فہمِ صحابہ کے مطابق عمل کرنا، صحابہ کرام کے طریقے پر چلنا، سلفی منہج کے ماننے والوں کو اہل حدیث بھی کہتے ہیں جن کی صرف یہی پکار ہے
دین ھدی کے دو ہی اصول
اطيعواالله واطيعواالرسول
موجودہ دَور میں سلفی منہج سے بہت زیادہ دشمنی کی جا رہی ہے خیر یہ دشمنی کوئی نئی نہیں ہے، اہل حق کی یہی پہچان ہے اس کے خلاف سارے لوگ برسرپیکار رہتے ہیں، آج شیعہ، بریلوی، دیوبندی، حنفی، قادیانی، رافضی، اخوانی، جماعت اسلامی سب لوگ سلفی منہج سے چڑھتے ہیں میں پوچھتا ہوں کہ ہم اہل حدیثوں کا قصور کیا ہے، کیا ہم مسلمان نہیں ہیں، تعجب ہوتا ہے کہ ایک مسلمان نماز پڑھتا ہے، نبی کا کلمہ پڑھتا ہے، نبی کریم صلی اللہ علیہ و سلم سے محبت کا اظہار کرتا ہے لیکن سلفی منہج کو دل کھول کر گالی دیتا ہے، جھوٹا الزامات لگاتا ہے، مار پیٹ پر اترتا ہے، سیاسی لیڈروں سے مل کر اور حکومت کا سہارا لے کر جھوٹے مقدمات میں پھنساتا ہے، اور اپنی طاقت کا غلط استعمال کرتا ہے، حد تو یہ ہے بعض ناعاقبت اندیش مسلمان سلفی مسجدوں کو گراتے ہیں، مساجد ومدارس کی تعمیر میں رکاوٹیں ڈالتے ہیں، بھلا بتاؤ ہمارا کیا قصور ہے؟
کوئی کہتا ہے کہ سلفیت میں دہشت گردی ہے، اہل حدیث متشدد ہوتے ہیں، اہل حدیثوں کا تعلق شیعوں سے ہے، یہ ائمہ کرام کے گستاخ ہوتے ہیں، صحابہ کو نہیں مانتے ہیں، انگریز کی اولاد ہیں، انگریز کے ایجنٹ ہیں، یہ مسلمانوں میں پھوٹ ڈالتے ہیں، قرآن وحدیث کا دعوی تو کرتے ہیں لیکن گمراہی پھیلاتے ہیں ائمہ اربعہ کی تقلید نہیں کرتے ہیں، سلفی منہج والے ریال خور ہیں، سعودی بھکت ہیں، غرض کہ جو جیسے چاہتا ہے اپنی زبان کا ناجائز استعمال کرتا ہے اور سلفیت سے دشمنی کرنے میں کوئی کسر نہیں چھوڑتا ہے، لیکن ہمیں اس پر کوئی اعتراض اور کوئی دکھ نہیں ہوتا ہے کہ ہم کو کوئی گالی دے یا بددعا دے یا ہمارے خلاف عوام میں یا میڈیا میں زہر اگلے، کیونکہ جب ہم نے حق کو پالیا ہے تو ٹینشن کس بات کا، دکھ تو اس بات کا ہوتا ہے کہ یہ بےچارے جو ہم سے دشمنی کرتے ہیں ہماری دعوت کو مٹانے کی کوشش کرتے ہیں یہ تو حق سے محروم ہیں، انہوں نے سلفیت کو ابھی تک پہچانا ہی نہیں ہے، لہٰذا ہم سارے لوگوں کو دعوت فکر دیتے ہیں، یہ پیغام دیتے ہیں کہ اللہ کے لیے آپ ہم سے دشمنی مول نہ لیں، ہم سے قریب ہوں، ہماری مجلسوں میں آئیں، ہماری مسجدوں میں آئیں، ہمارے بیانات سنیں، ہماری کتابیں پڑھیں، آئیں ہم سے قرآن وحدیث سیکھیں، قریب ہو جائیں، ایک دوسرے کی قدر کرنا سیکھیں، نفرتوں سے بچیں، انصاف کریں، انسانیت کا خیال رکھیں، دوری بنائے رکھنے سے بچیں، کیونکہ دوریوں سے نفرتیں بڑھتی ہیں، عداوتیں بڑھتی ہیں، بدگمانیاں جنم لیتی ہیں، ہماری دعوت (سلفی دعوت) کھلی کتاب کی طرح ہے، ہم کوئی چیز چھپ کر نہیں کہتے ہیں، ہم حق کے پیروکار ہیں، دلیل کے تابع ہیں، ہمارے یہاں بڑوں بزرگوں سبھوں کا احترام بھی ہے لیکن جن کی بات قرآن و حدیث کے خلاف ہو وہاں ہم کسی کی بھی بات نہیں مانتے ہیں ہم خالص رسول اکرم صلی اللہ علیہ و سلم کی پیروی کرتے ہیں کیونکہ اللہ نے رسول کی پیروی کا حکم دیا ہے، دعا ہے کہ اللہ تعالٰی ہم سب کو ہدایت دے اور دین حق پر استقامت کی توفیق دے آمین-
═════ ❁✿❁ ══════
 
Top