ذیشان خان

Administrator
بسم الله الرحمن الرحيم وبه نستعين

بلدِ توحيد سعودیہ عربیہ سے دشمنی کی وجہ

ازقلم: عبیداللہ بن شفیق الرحمٰن اعظمیؔ محمدیؔ مہسلہ
.........................................................
سعودی عرب اور وہاں کی حکومت سے بعض نام نہاد مسلمان جیسے اخوانی، تحریکی، بریلوی، صوفی، شیعی اور بدعتی تمام ٹولہ بغض رکھتا ہے اور ہمیشہ سعودی عرب کے خلاف زہر اگلتا ہے اور جو سعودی عرب کی حمایت کرتے ہیں انہیں فوراً ریال خوری کا طعنہ دیتے ہیں، آئیے آج سعودی عرب کی حقیقت یا ان کی بعض خوبیوں کو بیان کرتے ہیں اگر آپ سنجیدگی سے پڑھ کر سمجھیں گے تو آپ بھی بلاد توحید سعودیہ عربیہ سے ضرور محبت کریں گے-
*سعودی عرب کی چند اہم خوبیاں*
1) سعودی عرب میں توحید اور دین خالص کا مکمل غلبہ ہے یہاں صرف سنت کی پیروی کی جاتی ہے، یہاں بدعات وخرافات کا کوئی نام و نشان نہیں ہے-
2) سعودی عرب اپنی بساط سے بڑھ کر پوری دنیا کے غریبوں کی مدد کرتا ہے-
3) مجمع ملک فہد مدینہ منورہ سعودی عرب کا مصحف پوری دنیا میں مفت تقسیم کیا جاتا ہے اسی طرح ہر زندہ زبان میں قرآن کا ترجمہ وتفسير بھی پورے عالم اسلام میں مفت تقسیم کیا جاتا ہے جس کا پورا خرچ سعودی گورنمنٹ برداشت کرتی ہے-
4) سعودی عرب میں مفت تعلیم کا نظم ہے اور یہاں پوری دنیا کے طلبہ دین کا علم سیکھتے ہیں سعودی گورنمنٹ ان کے مکمل اخراجات کے ساتھ ساتھ نو سو ریال سے زائد (تقریباً 18000/ روپیہ انڈین) وظیفہ بھی دیتی ہے-
5) سعودی عرب میں ہر نماز کے وقت ساری دکانیں بند ہو جاتی ہیں یہاں نماز کے وقت کاروبار وغیرہ پر مکمل پابندی ہے-
6) سعودی عرب یہ دنیا کا واحد ملک ہے جہاں شرعی قوانین کا نفاذ ہوتا ہے، چوری کی سزا ہاتھ کا کاٹنا، قتل کی سزا قتل، زنا کی سزا رجم، مرتد کی سزا قتل وغیرہ وغیرہ-
7) سعودی عرب میں مکمل امن ہے یہاں پر اسلام کا ایک اہم رکن حج ادا ہوتا ہے جو دنیا کا سب سے بڑا اجتماع ہوتا ہے لیکن مار پیٹ، قتل و غارت گری یا دنگا فساد کچھ بھی نہیں ہوتا ہے-
8) سعودی عرب میں مکمل انصاف سے کام لیا جاتا ہے یہاں رشوت خوری نہیں چلتی ہے، قاضی قرآن وحدیث کے مطابق فیصلہ کرتا ہے یہاں تک کہ یہی قاضی بادشاہ اور اس کے متعلقین ومتوسلین کا بھی فیصلہ سناتا ہے-
9) سعودی عرب میں ربانی علماء کی بڑی عزت ہے-
10) سعودی عرب میں پاکیزگی اور صفائی ستھرائی کا غیر معمولی اہتمام ہے-
11) سعودی عرب کے لوگ بہت سخاوت کرتے ہیں-
12) سعودی عرب کے لوگ دعا بہت دیتے ہیں اور اکثر و بیشتر اپنی زبان کو اللہ کے ذکر سے تر رکھتے ہیں، بکثرت نبی پر درود بھیجتے ہیں اور قرآن کی شاندار تلاوت کرتے ہیں اور روتے ہیں-
13) سعودی عرب میں عورتوں پر ظلم نہیں ہوتا ہے، یہاں لڑکیوں کی شادی بآسانی ہو جاتی ہے-
14) سعودی عرب میں جہیز کا فتنہ نہیں ہے-
15) سعودی عرب میں خودکشی کی شرح بالکل نہ کے برابر ہے، یہاں کوئی شخص بھوک سے نہیں مرتا ہے-
16) سعودی عرب میں کبھی کوئی چیز مہنگی نہیں بکتی ہے یہاں تک کہ ہنگامی حالات میں بھی ضرورت کے سامان سستے داموں میں فروخت ہوتے ہیں-
17) سعودی عرب میں دعوت وتبلیغ کے لیے پورے مملکہ میں ہزاروں دعوتی سینٹرس ہیں جن کو جالیات کے نام سے جانا جاتا ہے، جالیات میں ہر زبان کے دعاۃ ومبلغین کو اچھی تنخواہ پر رکھا جاتا ہے اور یہ دعاۃ بڑے خلوص اور جذبے سے دین کا کام کرتے ہیں، الحمدللہ دعوہ سینٹر سے بہت فائدہ ہوتا ہے، کتنے ایسے غیر مسلم ہیں جنہیں اسلام کی سعادت جالیات کے دعاۃ سے حاصل ہوئی اور کتنے ایسے لوگ ہیں جو سعودیہ کمانے کے لیے گئے وہاں انہوں نے دین وعقیدہ سیکھا اور وہ بھی حق کے داعی بن گئے-
18) سعودی عرب میں عریانیت اور ننگا پن نہیں ہے مرد وزن میں اختلاط کا کوئی تصور نہیں ہے اسی وجہ سے زنا کی شرح بالکل نہ کے برابر ہے-
19) سعودی عرب میں مکہ اور مدینہ ہے جہاں قرآن کا نزول ہوا ہے، صحابہ کرام نے جہاد کیا ہے دین کے لیے طرح طرح کی قربانی دی ہے، مکہ میں کعبہ شریف ہے جو ہمارا قبلہ ہے ہم ہر نماز میں کعبہ کی طرف رخ کرتے ہیں، مکہ میں حج ہوتا ہے، یہاں حرم شریف ہے، صفا ومروہ ہے، زمزم ہے، اور مدینہ بھی حرم ہے، یہاں رسول اور ہزاروں صحابہ اور اولیاء کرام مدفون ہیں، یہاں مدینہ میں ایک جگہ ہے جو جنت کی ایک کیاری ہے، یہاں بقیع غرقد ہے جہاں مدفون ہونا بہت بڑی سعادت کی بات ہے-
20) سعودی عرب کے لوگ اپنے بادشاہ کی عزت کرتے ہیں اور بادشاہ کے اشارے پر چلتے ہیں سمع وطاعت کا جذبہ رکھتے ہیں جو کہ عین قرآن و حدیث کی تعلیم ہے-
21) سعودی عرب یہ واحد ملک ہے جہاں مخلوط تعلیم نہیں ہوتی ہے-
22) سعودی عرب یہ واحد ملک ہے جہاں شرک کے مظاہر نہیں ہیں-
23) مکہ سعودی عرب سے محبت رکھنے کے لیے ہمارے بابا ابراہیم علیہ السلام نے اللہ سے دعا کی تھی اے میرے رب تو لوگوں کے دلوں کو مکہ کی طرف مائل کر دے (سورہ ابراہیم:37)
24) سعودی عرب میں ہم جنس پرستی نہیں ہے-
25) سعودی عرب کی حکومت اپنی رعایا کو اپنی خاندان سمجھتی ہے اسی لیے ان پر بےتحاشا خرچ کرتی ہے تعلیم بالکل مفت دیتی ہے مزید تنخواہ کی طرح وظیفہ دیتی ہے اور طرح طرح کی سہولیات فراہم کرتی ہے-
26) سعودی عرب کا پولیس عملہ کبھی کسی پر ظلم نہیں کرتا ہے بلکہ ایک باپ کی طرح شفقت سے پیش آتا ہے اور خدمت کرتا ہے-
27) سعودی عرب ہمیشہ فلسطینیوں کے لیے مسیحا بن کر کھڑا رہتا ہے اور اپنی طاقت سے بڑھ کر مالی مدد کرتا ہے-
28) سعودی عرب میں ہزاروں کی تعداد میں برمی مسلمانوں مقیم ہیں ان کو سعودی عرب کی شہریت حاصل ہے-
29) سعودی عرب میں مسلکی تعصب نہیں ہے اور نہ تقلیدی جمود ہے، یہاں سب دلیل کے پابند ہیں، کیونکہ سعودی عرب کا دستور صرف قرآن وحدیث ہے-
30) سعودی عرب کے لوگوں میں دینداری زیادہ ہے-
یہ چند اسباب ہیں جن کی وجہ سے ہر موحد سعودی عرب سے اللہ کے لیے محبت کرتا ہے نہ کہ کسی دنیوی مفاد کے لیے، سعودی عرب سے دشمنی وہی کر سکتا ہے جو منافق اور بدعتی ہو، کیونکہ ان کی دشمنی توحید وسنت سے ہے، اسی وجہ سے یہ سعودیہ سے جلتے ہیں، لیکن یاد رہے کہ ہم سعودیہ سے محبت کرتے ہیں مگر ہم اندھ بھکت نہیں ہیں کہ سعودیہ کی ہر بات اپنے لیے حجت بنا لیں، سعودی والے بھی انسان ہیں فرشتے نہیں، ان سے بھی غلطی ہوتی ہے وہ بھی گناہ کرتے ہیں، لیکن ان کے یہاں خیر بہت زیادہ ہے بھلائی بہت زیادہ ہے، ہم اللہ سے دعا کرتے ہیں کہ اے مولائے کریم تو سعودیہ کو دین کی خدمت کے لیے مسخر کر دے اور ان کو ہر شر سے محفوظ رکھ اور ہم سب کو حق وانصاف کی بات کہنے کی توفیق دے آمین-
═════ ❁✿❁ ══════
 
Top