ذیشان خان

Administrator
بسم الله الرحمن الرحيم وبه نستعين

سابقین اولین کی قربانیاں

ازقلم: عبیداللہ بن شفیق الرحمٰن اعظمیؔ محمدیؔ مہسلہ
.........................................................
سابقین اولین ان صحابہ کرام رضوان اللہ علیہم اجمعین کو کہتے ہیں جو آپ صلی اللہ علیہ و سلم پر ایمان لانے میں سبقت کیے تھے جیسے ابوبکر صدیق، بلال حبشی، علی بن ابی طالب، زید بن حارثہ، خباب بن ارت، سعد بن ابی وقاص، عثمان بن مظعون، عثمان بن عفان، عبدالرحمن بن عوف، سعید بن زید، طلحہ بن عبیداللہ، ابوعبیدہ بن جراح، زبیر بن عوام وغیرہ وغیرہ رضی اللہ عنہم اجمعین یہ سارے صحابہ کرام نبوت کے آغاز میں ہی مشرف بہ اسلام ہو چکے تھے-
قارئین کرام! سابقین اولین کی قربانیاں بہت زیادہ ہیں، آئیے ان کی قربانیوں کو مختصر طور پر جاننے کی کوشش کرتے ہیں-
1) دین پر استقامت، یعنی ہر حال میں دین اسلام پر جمے رہنا، دین کا سودا نہ کرنا اور ہر قسم کی تکلیف برداشت کرنا-
2) جان کی قربانی، سیدہ سمیہ رضی اللہ عنہا کو بڑی بےدردی سے مارا گیا، یاسر رضی اللہ عنہ کو تڑپا تڑپا کر شہید کیا گیا، ان دونوں نے اپنی جان کی قربانی دے دی مگر اسلام سے ایک لمحہ کے لیے بھی سمجھوتہ نہیں کیا-
3) مال کی قربانی، اسلام قبول کرنے کے نتیجے میں کافروں نے مسلمانوں کا مال، گھر اور پراپرٹی ضبط کر لی، انہیں اتنا ستایا کہ مسلمان آبائی وطن چھوڑنے پر مجبور ہو گئے اور اللہ کی رضا کے واسطے مسلمانوں نے اپنا سارا سرمایہ لٹا دیا اور ہجرت کر گئے-
4) قید وبند کی صعوبتیں، شروع دَور میں اسلام لانا گویا اپنی جان جوکھم میں ڈالنا تھا، کفار قریش نے مسلمانوں کے خلاف جنگ چھیڑ دی تھی، نبوت کے ساتویں برس مسلمانوں کا سماجی بائیکاٹ کیا گیا، بےچارے مسلمان شعب ابی طالب میں محصور ہوگئے اور یہ سلسلہ تین سال تک مسلسل جاری رہا-
5) انتہائی پُرمشقت عذاب پر صبر کرنا، بلال حبشی رضی اللہ عنہ کو تپتی ریت پر گھسیٹا گیا ان کے سینے پر بھاری اور وزنی پتھر رکھا گیا اور کوڑوں سے مارا گیا، عثمان بن مظعون رضی اللہ عنہ کو چٹائی میں لپیٹ کر ناک میں دھواں دیا گیا اور مارا گیا پھر بھی وہ احد احد کہتے تھے، خباب بن ارت رضی اللہ عنہ کو ننگی پیٹھ دہکتی آگ پر لٹایا گیا، مصعب بن عمير رضی اللہ عنہ کی ساری دولت چھین لی گئی یہاں تک کہ جسم کا لباس بھی اتار لیا گیا بےچارے ٹاٹ پہننے پر مجبور ہوگئے-
6) ہر محاذ پر رسول کا ساتھ دینا، جنگوں میں ہمیشہ پیش پیش رہنا، ہر کار خیر میں بڑھ چڑھ کر حصہ لینا، اسی لیے سابقین اولین میں سے دس لوگوں کو نام کے ساتھ آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے جنت کی بشارت دی ہے اور ان سبھوں کا تاریخِ اسلام میں بہت بڑا کردار رہا ہے-
7) سابقین اولین صحابہ کرام نے شریعت کے تحفظ میں سب سے بڑا کردار ادا کیا ہے، انہوں نے قرآن یاد کیا، لکھا، عمل کیا اور لوگوں تک پہنچایا-
8) سابقین اولین صحابہ کرام نے اوروں کے مقابلے میں اللہ کی راہ میں مال زیادہ خرچ کیا ہے، یہ ابوبکر صدیق رضی اللہ عنہ ہیں جنہوں نے اپنا پورا مال اللہ کی راہ میں خرچ کر دیا، اسی طرح عثمان غنی رضی اللہ عنہ اور عبدالرحمن بن عوف اور دیگر صحابہ کرام نے دل کھول کر خرچ کیا-
9) دعوتی قربانی، سابقین اولین نے اسلام کی دعوت کو اور توحید کی پکار کو مکہ شہر میں عام کیا، مسلمانوں کی دعوتی کوششوں سے بہت سارے لوگ مشرف بہ اسلام ہوئے، دعوتی مشن کو فعال بنانے میں سب سے نمایاں نام سیدنا ابوبکر صدیق رضی اللہ عنہ کا ہے-
10) نبی کریم صلی اللہ علیہ و سلم کی زندگی میں جیسے سابقین اولین صحابہ کرام نے خوب قربانی دی، اسی طرح آپ کے بعد بھی سابقین اولین مسلمانوں نے اسلام اور مسلمانوں کی خدمت کی، خلافت کی ذمہ داری کو قبول کیا، اور اسلام کو دنیا کے چپے چپے میں پھیلایا، ابوبکر صدیق، عمر فاروق، عثمان بن عفان، علی بن ابی طالب رضی اللہ عنہم اجمعین یہ چاروں صحابہ کرام سابقین اولین میں سے ہیں، عشرہ مشرہ میں سے ہیں، خلفائے راشدین ہیں، اول الذکر دونوں رسول کے سسر ہیں اور موخر الذکر دونوں رسول کے داماد ہیں، ان چاروں کا تاریخِ اسلام میں بہت بڑا کردار ہے ان کی بڑی خدمات ہیں، اللہ تعالٰی ہم سب کو دین کی خدمت کی توفیق عطا فرمائے آمین-
═════ ❁✿❁ ══════
 
Top