ذیشان خان

Administrator
سلفیت کی حقیقت

عربی تحریر: شیخ محمد علی فرکوس حفظہ اللہ
(أستاذ بكلية العلوم الإسلامية بجامعة الجزائر)
(الكلمة الشهرية رقم: ٨٣) شرف الإنتساب إلى مذهب السلف.

اردو ترجمانی: حافظ عبدالرشید عمری

سلفیت ایک ایسا منہج ہے جس کی طبیعت میں شمولیت ہے
جس منہج کی خاصیت یہ ہے کہ وہ دوسرے منحرف مناهج(جادہء حق سے ہٹے ہوئے طریقوں) کے درمیان افراط وتفریط سے دور عقیدہ و منھج کے لحاظ سے متوسط و معتدل ہے
یہ منہج دین میں بے جا جھگڑے سے بچتا ہے
یہ منہج فکری جمود(ٹھہراؤ) اور مذہبی تعصب(بےجا طرف داری) کا خاتمہ کرتا ہے
یہ منہج بدعات کے خلاف برسر پیکار رہتا ہے اور اہل ایمان کو ان بدعات سے چوکنا کرتا رہتا ہے
اس منہج کی دعوتی سرگرمیوں کا مرکز و محور اللہ تعالٰی کی خالص عبادت کی دعوت دینا ہے اور اللہ کے رسول صلی اللہ علیہ و سلم کی کامل اتباع کی دعوت دینا ہے اور شرک سے اور اس کے اسباب و وسائل سے ڈرانا ہے
اس منہج کے حاملین کی صفوں میں ظاہری حیثیت سے اتحاد بھی ہے اور ان کے دلوں میں باطنی حیثیت سے اتفاق بھی ہے ۔
کیوں کہ وحدت و اجتماعیت کی حقیقی بنیاد توحید و اتباع ہی ہے
اس منہج کے حاملین ہر دور کے حالات حاضرہ کو توحید و اتباع ہی کے آئینہ ہی سے دیکھتے ہیں،
اور امت مسلمہ کے سارے نئے پیدا شدہ مسائل کا حل توحید و اتباع ہی کے تناظر میں تلاش کرتے ہیں۔
ان کا عقیدہ بہت ٹھوس ہے کہ امت کے مستقبل کا اچھا یا برا انجام اللہ ہی کے حوالے ہے
اور اللہ تعالٰی کے وعدوں پر ان کو کامل یقین ہے کہ اگر وہ شریعت کے مطابق اپنی زندگی ڈھال لیں گے
تو اللہ تعالٰی ان کی ضرور نصرت فرمائے گا ۔
وہ اللہ تعالٰی کے اس قول کو پیش نظر رکھتے ہوئے اپنی اصلاح کرتے رہتے ہیں،
إن الله لايغير ما بقوم حتى يغيروا ما بأنفسهم (الرعد:٥٣)
اللہ تعالٰی کسی قوم کی حالت اس وقت تک نہیں بدلتا جب تک کہ وہ خود اپنی حالت نہ بدلے
یعنی جب کوئی قوم گناہ میں ملوث ہوتی ہے تو اللہ تعالٰی اس سے اپنی نعمت چھین لیتا ہے۔
اور اللہ تعالٰی کے اس قول کو بھی وہ پیش نظر رکھتے ہیں:
ياأيها الذين آمنوا إن تنصروا الله ينصركم و يثبت أقدامكم(محمد: ٧)
اے ایمان والو!اگر تم اللہ(کے دین) کی مدد کرو گے تو وہ تمہاری مدد کرے گا اور تمہیں ثابت قدم رکھے گا۔

اس منهج کے حاملین ربانی منہج( قرآن و سنت اور فہم سلف) کو پیش نظر رکھ کر دعوت إلی اللہ کا فریضہ انجام دیتے ہیں يعنى شرک و بدعت اور معصیت سے پاک کرنے اور توحید وسنت اور طاعت سے آراستہ کرنے کا فریضہ انجام دیتے ہیں۔
 
Top