ذیشان خان

Administrator
بسم الله الرحمن الرحيم وبه نستعين

ڈاکٹروں کے لیے چند نصیحتیں
ازقلم: عبیداللہ بن شفیق الرحمٰن اعظمیؔ محمدیؔ مہسلہ
.......................................................
انسانی زندگی میں علم طب (ڈاکٹری) کی بڑی اہمیت ہے، اسلام ہر نفع بخش علم سیکھنے کی ترغیب اور تاکید کرتا ہے گرچہ وہ علم طب ہی کیوں نہ ہو، ڈاکٹر اور طبیب یہ ہر شہر اور ہر گاؤں کی ضرورت ہیں، اور خدمت خلق میں ڈاکٹروں کی بڑی قربانیاں ہیں، ہمارے ڈاکٹر بےچارے جان ہتھیلی پر رکھ کر مریضوں کا علاج کرتے ہیں، لیکن یہ بھی ہمارے زمانے کی ایک بہت بڑی سچائی ہے کہ اکثر ڈاکٹروں میں مادیت کا غلبہ ہے، وہ مریض کی خدمت کم، ان سے قیمت زیادہ لیتے ہیں، دس بیس کی دوا دیتے ہیں سو روپیہ اینٹھ لیتے ہیں، آج دن بدن علاج کی قیمت بڑھتی جا رہی ہے اور غریبوں کے لیے مصیبت بڑھتی جا رہی ہے، لہٰذا ڈاکٹروں کو چاہیے کہ وہ حلال طریقے سے روزی کمائیں، غریبوں پر ترس کھائیں، زیادہ مال نہ کمائیں مخلوق کی خدمت کریں، اللہ توفیق دے آمین-
قارئین کرام! ہم ہر طبقے کو کم زیادہ نصیحت کرتے ہیں، لوگوں کو خیر کی تعلیم دیتے ہیں مگر اطباء اور ڈاکٹروں کی طرف توجہ بہت کم دیتے ہیں، آئیے آج ہم ڈاکٹر حضرات کو کچھ اہم نصیحت کرنا چاہتے ہیں جو حسب ذیل ہیں-
1) جب تک گہرا علم اور تجربہ نہ ہو تب تک مریض کا علاج نہ کریں-
2) جس بیماری کے علاج کا علم نہ ہو اس کا علاج نہ کریں، بلکہ ماہرین اور متخصصين کی طرف جانے کا مشورہ دیں-
3) مریض کو حوصلہ دیں، شفایابی کی امید دلائیں-
4) علاج کی قیمت معروف طریقے سے لیں یعنی علاج کا زیادہ پیسہ نہ لیں-
5) مجبوروں اور غریبوں کا خیال رکھیں اور اہل علم کے ساتھ بھی ضرور رعایت کریں-
6) اپنے دواخانہ کو خوب صاف رکھیں-
7) اتنی ہی دوا دیں جتنی کی بیماری ہے، بیماری سے زائد دوا قطعاً نہ دیں، اسی طرح دل گردہ کو نقصان پہنچانے والی دوا بھی نہ دیں-
8) اپنے دواخانہ میں عورتوں کے لیے پردہ وغیرہ کا سسٹم درست رکھیں-
9) ہنگامی یا ایمرجنسی حالت میں دن ورات جب بھی علاج کے واسطے بلایا جائے تو فوراً تشریف لائیں-
10) پہلے اچھی طرح مریض کی پریشانی کو مکمل سنیں اور مرض کو بغور دیکھیں پھر علاج شروع کریں، جلد بازی بالکل نہ کریں-
11) دوا دینے کے بعد اچھی طرح چیک کرلیں اور دوا شمار کر لیں، مزید کونسی دوا کب اور کیسے کھائی جائے گی اسے بھی مکمل بتا دیں، اور اگر دوا کی پڑیا پر لکھ دیں تو یہ زیادہ بہتر ہے-
12) مریض کو دوا دینے کے ساتھ بیماری کے متعلق پرہیز کا نسخہ بھی لکھ دیں یا جہرا اطمینان سے بتا دیں-
13) عورت کا جب علاج کریں تو عورت کو شہوت کی نگاہ سے نہ دیکھیں اور نہ شہوت سے ہاتھ پکڑیں-
14) اپنے مریضوں کے ساتھ حسن سلوک کریں، مریضوں سے سخت کلامی اور بدکلامی سے پرہیز کریں، مریضوں کے ساتھ اپنی ہمدردی دکھائیں-
15) وقت پر اپنا دواخانہ کھولیں اور وقت پر بند کریں، اپنا ہر کام وقت پر کریں-
16) نہ رشوت دیں اور نہ رشوت کھائیں-
17) اپنے دواخانہ میں مریض اور ان کے متعلقین کے بیٹھنے وغیرہ کا بہترین انتظام کریں-
18) غریبوں کا علاج فری میں کریں یا مال کی ادائیگی میں سہولت دیں اور نرمی برتیں-
19) پنج وقتہ باجماعت نماز پڑھیں-
20) کثرت سے صدقہ کریں-
ڈاکٹروں کے لیے یہ چند نصیحتیں ہیں جن پر عمل کرنا ہر ڈاکٹر کے لیے بہت ضروری ہے، اللہ تعالیٰ سے دعا ہے کہ اللہ تعالیٰ ڈاکٹروں کو ہدایت دے اور ہم سب کو حلال کمانے کی توفیق دے آمین-
══════════ ❁✿❁ ══════════
 
Top