ذیشان خان

Administrator
اخلاص کے متعلق اقوال

✍ علامہ ابن القیم الجوزی رحمہ الله

یعقوب ؒنے فرمایا:: کہ مخلص آدمی کی نشانی یہ ہے کہ وہ اپنی اچھائیوں کو ایسے ہی مخفی اور پوشیدہ رکھے جیسے وہ اپنی برائیوں کو مخفی اور پوشیدہ رکھتا ہے

سوسی رحمہ اللہ نے فرمایا : ”اخلاص ،اخلاص کا نظرنہ آنا ہے ،کیونکہ جس نے اپنے اخلاص میں اخلاص کا مشاہدہ کیا تو اس کے اخلاص کو اخلاص کی ضرورت ہے“

عــمل کو خودپسندی اور ریا و نمود سے پاک و صاف کرنے کے متعلق جو کہا گیا ہے اس کا مطلب یہ ہے کہ اپنے عمل میں اخلاص اور سچائی کی طرف نظر کرنا بھی خودپسندی اور ریا ہے ،اور یہ بات جملہ آفات میں سے ہے ،اور خالص تو وہ ہے جو تمام عیبوں اور آفتوں سے پاک ہے “

ایوبؒ نے فرمایا : ”عمل کرنے والوں پر نیتوں کا خالص بنانا سب سے مشکل اور گراں بار ہے “

بعض سلف نے فرمایا : ”تھوڑی دیر کے اخلاص میں ہمیشگی اور ابدی نجات ہے ،لیکن اخلاص نایاب اور مشکل چیز ہے"

سہل ؒ سے دریافت کیا گیا : نفس پر سب سے زیادہ کیا چیز مشکل اور گراں ہے ،فرمایا "اخلاص" ،کیونکہ نفس کے لئے اس میں فائدہ نہیں ہے۔

فضیل ؒ نے فرمایا:: لوگوں کی خاطر عمل نہ کرنا ریا ہے ،اور لوگوں کی خاطر عمل کرنا "شرک" ہے،اور اخلاص یہ کہ اللہ تعالٰی آپ کو ان دونوں سے عافیت نصیب فرمائے۔

📒پیشکش: مجموعہ اللؤلؤ والمرجان
 
Top