ذیشان خان

Administrator
الاخوان المسلمون دہشت گرد تنظیم ہے: کبائر علماء کونسل

بدھ 25 ربیع الاول 1442هـ - 11 نومبر 2020م

شیئر کریں

ایجنسیاں
سعودی عرب کی کبائر علماء کونسل نے عالم عرب میں سرگرم دینی وسیاسی جماعت الاخوان المسلمون کو ’’دہشت گرد تنظیم‘‘ قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ تنظیم جماعتی اہداف کو اسلامی تعلیمات پر فوقیت دیتی ہے۔ ’’یہ دین کی آڑ میں فتنہ انگیزی، تفرقہ بازی، تشدد اور دہشت گردی کر رہی ہے۔‘‘

کبائر علماء کونسل علما کے سربراہ اور مملکت کے مفتی اعظم عبدالعزيز بن عبدالله بن محمد آل الشيخ اور علماء کونسل کے دیگر فاضل اراکین کے دستخط کے ساتھ منگل کو جاری کردہ بیان کا حوالہ دیتے ہوئے سعودی خبر رساں ادارے ’’ایس پی اے‘‘ کی رپورٹ میں کہا گیا کہ ’اللہ تعالی نے ہمیں حق کا ساتھ دینے اور تفرقہ وانتشار سے باز رہنے کا حکم دیا ہے‘۔

نامور علماء پر مشتمل اعلی سعودی کونسل نے اخوان سے متعلق اپنے دو ٹوک موقف کے حوالے سے قرآنی آیات اور احادیث سے استدلال کرتے ہوئے دعویٰ کیا کہ ’عصر حاضر میں الاخوان المسلمون ایسی جماعتوں میں سرفہرست تنظیم ہے جو اسلامی ہدایت سے روگردانی کرتی ہیں۔ یہ ریاستی حکام کے ساتھ جھگڑے برپا کرنے، حکام کے خلاف بغاوت، مختلف ملکوں میں فتنہ انگیزی اور پر امن بقائے باہمی کے ماحول کو تہہ وبالا کرنے میں مصروف ہیں‘۔ علماء کونسل نے واضح کیا کہ ’الاخوان المسلمون مسلم معاشروں کو زمانہ جاھلیت کا نمونہ قرار دے رہی ہے‘۔

علماء کونسل نے مزید کہا کہ ’اپنے قیام سے تادم تحریر اس تنظیم نے نہ تو اسلامی عقائد پر توجہ دی اور نہ قرآن وسنت کے علوم میں دلچسپی دکھائی۔ اس کا مشن اقتدار کا حصول ہے۔ اس جماعت کی تاریخ شر انگیزیوں اور فتنہ پردازیوں سے بھری ہوئی ہے‘۔ کونسل الزام عاید کیا دہشت گرد اور انتہا پسند تنظیموں نے الاخوان المسلمون کے بطن سے جنم لیا ہےجو ملک وقوم کے خلاف افراتفری برپا کیے ہوئے ہیں۔ ان تنظیموں کی تاریخ دنیا بھر میں تشدد اور دہشت گردی کے جرائم سے بھری پڑی ہے۔

سعودی عرب کے جید علماء کی سوچی سمجھی رائے ہے کہ اخوان دہشت گرد تنظیم ہے۔ یہ دین مخالف جماعتی اہداف کے پیچھے دوڑنے والی جماعت ہے۔ ’سب لوگ اس جماعت سے خبر دار رہیں، نہ کوئی اس سے نسبت قائم کرے اور نہ ہمدردی کا اظہار کرے‘۔

مختصر لنک
 
حیرت ہے ان کبائر علماء ہر، جو۔مرتد جماعت کے ارتداد کو چھپاکر ان پر دہشتگردی کا لیبل لگا رہے ہیں۔ حالانکہ اخوانیوں کا ارتداد روز روشن کی طرح واضح ہے۔
 
حیرت ہے ان کبائر علماء ہر، جو۔مرتد جماعت کے ارتداد کو چھپاکر ان پر دہشتگردی کا لیبل لگا رہے ہیں۔ حالانکہ اخوانیوں کا ارتداد روز روشن کی طرح واضح ہے۔
السلام علیکم و رحمۃ اللہ و برکاتہ

محترم آپ کی شخصیت سے میں واقف نہیں ہوں لیکن جہاد پر آپ کی دو تین تحریروں کو پڑھ کر یہ اندازہ لگانا مشکل نہیں رہا کہ آپ کا تعلق تحریکیوں سے مثلا جماعت اسلامی یا تنظیم اسلامی وغیرہ
......


اور لگ رہا ہے آپ اپنے آپ کو بڑا علامہ سمجھتے ہیں یا پھر آپ کا علم وعلما سے دور دور تک کوئی واسطہ ہی نہیں ہے ورنہ آپ اپنی تحریروں میں ہمیشہ کبار علمائے اسلام پر نقد اور ان کے خلاف زبان طعن دراز نہ کرتے...


کیا لگتا ہے آپ کو سعودی کبار علما کمیٹی آپ کی طرح لیکر کا فقیر ہے ؟؟؟

کسی پر مرتد اور ارتداد کا حکم لگانا یہ تکفیر ہے اور تکفیر کس قدر سنگین عمل ہے شاید آپ کو اس چیز کا اندازہ نہیں ہے یا آپ خود تکفیریوں میں سے ایک ہیں.... آپ کو معلوم ہونا چاہیے کہ سب سے پہلے جہاں کے علما نے اخوان المسلمون اور داعش جیسی دہشت گرد تنظیموں پر دہشت گرد اور بدعتی ہونے کا حکم لگایا تھا وہ سعودی عرب کے کبار علمائے اہل حدیث ہیں......

خیر کیا کہا جائے... جہالت ہے ہی ایسی بیماری جو اچھے اچھوں کا دماغ خراب کر دیتی ہے....

وما علینا الا البلاغ
 
السلام علیکم و رحمۃ اللہ و برکاتہ

محترم آپ کی شخصیت سے میں واقف نہیں ہوں لیکن جہاد پر آپ کی دو تین تحریروں کو پڑھ کر یہ اندازہ لگانا مشکل نہیں رہا کہ آپ کا تعلق تحریکیوں سے مثلا جماعت اسلامی یا تنظیم اسلامی وغیرہ
......


اور لگ رہا ہے آپ اپنے آپ کو بڑا علامہ سمجھتے ہیں یا پھر آپ کا علم وعلما سے دور دور تک کوئی واسطہ ہی نہیں ہے ورنہ آپ اپنی تحریروں میں ہمیشہ کبار علمائے اسلام پر نقد اور ان کے خلاف زبان طعن دراز نہ کرتے...


کیا لگتا ہے آپ کو سعودی کبار علما کمیٹی آپ کی طرح لیکر کا فقیر ہے ؟؟؟

کسی پر مرتد اور ارتداد کا حکم لگانا یہ تکفیر ہے اور تکفیر کس قدر سنگین عمل ہے شاید آپ کو اس چیز کا اندازہ نہیں ہے یا آپ خود تکفیریوں میں سے ایک ہیں.... آپ کو معلوم ہونا چاہیے کہ سب سے پہلے جہاں کے علما نے اخوان المسلمون اور داعش جیسی دہشت گرد تنظیموں پر دہشت گرد اور بدعتی ہونے کا حکم لگایا تھا وہ سعودی عرب کے کبار علمائے اہل حدیث ہیں......

خیر کیا کہا جائے... جہالت ہے ہی ایسی بیماری جو اچھے اچھوں کا دماغ خراب کر دیتی ہے....

وما علینا الا البلاغ
آپ کی اطلاع کیلئے بتانا چاہتا ہوں کہ میرا تعلق نہ تو جماعت اسلامی والوں سے ہے اور نہ ہی تنظیم اسلامی سے کوئی تعلق نہیں ۔۔۔ بلکہ میں تو اول الذکر تنظیم کو مرتد کہتا اور ڈنکے کی چوٹ پر دلائل کی بنیاد پر ان کی تکفیر کرتا ہوں۔ میں ان کے درمیان 40 سال سے زیادہ کا عرصہ گذارا ہے۔۔۔ جماعت اسلامی یا اخوان المسلمون کے کفر میں شک کرنا اور ان کی تکفیر نہ کرنا کفر اکبر ہے۔ مثلاً یہود و نصاریٰ کے بارے میں یہ کہنا کہ ان کے حقوق اور مسلمانوں کے حقوق یکساں ہیں۔۔۔ یا عیسائیوں کی عیدوں میں شرکت کرنا اور کرسمس پر ان کو تحفے دینا اور ان کیلئے تقاریب منعقد کرنے۔۔۔ یا اقتدار میں ہونے کے باوجود کافروں کے نظام جمہوریت کو نافذ کرنا اور اسی سے فیصلہ کرنا۔۔۔

یہ اور اس جیسے بہت سے اعمال جو آدمی کو اسلام سے خارج کردیتے ہیں۔۔۔ جن کا ذکر ابن باز نے پوچھے گئے ایک سوال کےجواب میں کیا کہ یہ تمام اعمال اسلام سے خارج کرنے دینے والے ہیں۔۔۔ اور اسی پر محمد بن عبدالوھاب نے مختصر کتابچہ لکھا۔۔۔ اب یا تو ابن باز اور محمد بن عبدالوھاب غلط ہیں یا یہ کبائر علماء کرام۔۔۔ فیصلہ آپ کریں اور مجھ پر فضول الزامات سے پرہیز کریں۔
 
Top