ذیشان خان

Administrator
کون سی بدعت کب وجود میں آئی؟

پہلی صدی ہجری میں درج ذیل بدعتیں وجود میں آئیں:
1- تکفیر.
2- تشیع.
3- قدر.
4- ارجاء.
دوسری صدی ہجری میں درج ذیل بدعتیں ظاہر ہوئیں:
1- تعطیل اور تأويل (باطل).
2- جبر.
3- تشبیہ.
تسیری صدی ہجری میں درج ذیل بدعتوں نے جنم لی:
4- تصوف بدعی.
5- باطنیہ.
پھر تیسری صدی ہجری کے آواخر اور چوتھی صدی ہجری کے شروع میں مذکورہ بدعتیں درج ذیل فرقوں میں اصول کی حیثیت اختیار کر گئیں:
1- جہمیہ (معطلہ): خالص جبریہ و خالص مرجئہ.
2- معتزلہ: قدریہ، زیدیہ، اور رافضہ و خوارج.
3- خوراج: معتزلہ (خاص کر کے اباضیہ نے معتزلہ کے اصولوں کو اپنایا).
4- اہل کلام (کلابیہ، اشاعرہ، اور ماتریدیہ): خالص جہمیہ، معتزلہ، فلاسفہ، صوفیہ، رافضہ، اور جبریہ (ارجاء فقہاء) و قدریہ (کسب).
5- رافضہ، شیعہ: زیدیہ یا امامیہ، اسماعیلیہ، معتزلہ، جہمیہ، باطنیہ.
6- باطنیہ: زنادقہ، بعض رافضہ(جیسے: اسماعيلیہ اور عبیدیہ).
7- صوفیہ: ملاحدہ، زنادقہ، جہمیہ، معتزلہ، شیعہ رافضہ.
[دیکھیں: دراسات في الأهواء والفرق والبدع (ص: 95 - 97 و 203 - 204)]
 
Top